• صارفین کی تعداد :
  • 531
  • 1/19/2018 4:53:00 PM
  • تاريخ :

فلسطینی رہنما کا امام خامنہ ای کے نام خط، فلسطین کی حمایت پر قدردانی

حماس کے سربراہ اسما‏عیل ہنیہ نے رہبر انقلاب اسلامی کے نام اپنے خط میں تاکید کی ہے کہ ہم غزہ اور غرب اردن میں عوامی جوش و جذبے کی حامل تحریک انتفاضہ کے آغاز کے ساتھ انشاءاللہ مسئلہ فلسطین کو دبانے کے لئے طاغوت زمانہ ٹرمپ اور خطے کے بعض منافق حکمرانوں کی ناپاک و شرمناک اور گھناؤنی سازش کو ہرگز کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔

امام خامنہ ای
 
فلسطین کی اسلامی مزاحمتی تحریک حماس کے سربراہ اسماعیل ہنیہ نے امام خامنہ ای کے نام اپنے خط میں تحریر کیا ہے کہ اس دور کے طاغوت ڈونلڈ ٹرمپ اور خطے کے منافق عرب حکمرانوں کی مسئلہ فلسطین کے بارے میں گھناؤنی سازشوں کو ناکام بنادیا جائے گا۔
حماس کے سربراہ اسما‏عیل ہنیہ نے رہبر انقلاب اسلامی کے نام اپنے خط میں تاکید کی ہے کہ ہم غزہ اور غرب اردن میں عوامی جوش و جذبے کی حامل تحریک انتفاضہ کے آغاز کے ساتھ انشاءاللہ مسئلہ فلسطین کو دبانے کے لئے طاغوت زمانہ ٹرمپ اور خطے کے بعض منافق حکمرانوں کی ناپاک و شرمناک اور گھناؤنی سازش کو ہرگز کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔

اسماعیل ہنیہ نے مسئلہ فلسطین اور بیت المقدس کے بارے میں امریکہ کی بہت وسیع اور گہری سازشوں  کی طرف اشارہ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ اسرائیل کے خلاف جہاد کو ختم کرانے اور غزہ کے مضبوط قلعہ کو شکست دینےکے سلسلے میں امریکہ اور اس کے اتحادیوں کی گھناؤنی سازشوں کا سلسلہ جاری ہے۔

اسماعیل ہنیہ نے فلسطینی عوام اور بیت المقدس کے بارے میں امام خامنہ ای ، ایرانی قوم اور حکومت کی ٹھوس اور بے دریغ حمایت اور تعاون پر شکریہ ادا کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ہم اللہ تعالی کے فضل و کرم سے مسئلہ فلسطین اور بیت المقدس کے بارے میں اس دور کے طاغوت امریکی ٹرمپ اور اس کے اتحادیوں اور منافقوں کی گھناؤنی سازش کو ناکام بنادیں گے۔

اسماعیل ہنیہ نے امریکی صدر ٹرمپ کی جانب سے بیت المقدس کو اسرائیل کے دارالحکومت کی حیثیت سے تسلیم کئے جانے کے اعلان کو عرب، اسرائیل اتحاد کے لئے علاقے کے حکام کی راہ سے رکاوٹیں ختم کرنے اور تحریک مزاحمت کو نہتا کرنے کی کوشش قرار دیا۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی کے نام اسماعیل ہنیہ نے اپنے خط میں مزید لکھا ہے کہ فلسطینی عوام، ایرانی قوم اور حکومت کے پائدار اور ٹھوس مؤقف کی قدردانی کرتے ہیں ہمیں ایران کی بے لوث حمایت پر فخر ہے۔

انہون نے لکھا ہے کہ ہم فلسطین اور بیت المقدس میں جدید اور نئے انتفاضہ کےذریعہ امریکی صدر ٹرمپ اور خطے میں اس کے حامی عرب منافقوں کی گھناؤنی سازشوں کو ناکام بنادیں گے۔

حماس کے سیاسی شعبہ کے سربراہ نےلکھا ہے کہ امریکہ اور اس کے اتحادی، اسرائیل کے خلاف استقامت ،جہاد اور انتفاضہ کو ختم کرانے اور اس کے ساتھ سفارتی تعلقات قائم کرنے کے سلسلے میں تلاش و کوش کررہے ہیں لیکن فلسطینی عوام اپنے تاریخی قیام اور انتفاضہ کے ذریعہ ان کی مذموم کوششوں اور سازشوں کو ناکام بنادیں گے۔