• صارفین کی تعداد :
  • 3079
  • 7/6/2011
  • تاريخ :

عدم یہ ہے تو وجود کیا ہو گا؟

مسکراہٹ

عدم یہ ہے تو وجود کیا ہو گا؟

عبدالحمید عدم کو کسی صاحب نے ایک بار جوش سے ملایا اور کہا: یہ عدم ہیں۔ عدم کافی جسامت والے آدمی تھے۔ جوش نے ان کے ڈیل ڈول کو بغور دیکھا اور کہنے لگے:

عدم یہ ہے تو وجود کیا ہو گا؟


متعلقہ تحريريں:

مجاز کا کباب بیچنا

اندھے کو اندھيرے ميں بڑي دور کي سوجھي

اقبال ہميشہ دير سے آتا ہے

غالب قيد ميں

انجام بخير (حصّہ سوّم)