• صارفین کی تعداد :
  • 2063
  • 4/27/2011
  • تاريخ :

ایک عارف بوڑھے کی شہادت

بسم الله الرحمن الرحیم

خیثمہ بوڑھے تھے مگر صاحب معرفت تھے ان کے بیٹے بدر کی لڑائی میں شہادت کے درجہ پر فائز ہو چکے تھے لشکر اسلام کی احد کی طرف روانگی سے قبل انہوں نے رسول خدا سے عرض کیا: کل رات خواب میں میں نے اپنے بیٹے کو دیکھا، کہ وہ بہشت کے باغوں میں چلا جا رہا ہے۔ بہشت کے درختوں کے نیچے اس کی نہروں کے کنارے ٹہل رہا ہے، میرے بیٹے نے مجھ سے کہا کہ بابا جان! ہمارے پاس آجایئے کہ ہم نے خدا کے وعدہ کو سچا پایا۔ اے اللہ کے رسول میں اس بات کا مشتاق ہوں کہ اپنے بیٹے کے پاس پہنچ جاؤں اے پیغمبر خدا میری داڑھی سفید ہے، میری ہڈیاں کمزور ہو چکی ہیں میں چاہتا ہوں کہ آپ میرے لیے دعا فرمائیں کہ خدا مجھے شہادت نصیب کرے۔ پیغمبر نے فرمایا: خدایا اس شخص کی آرزو پوری کر دے۔ چنانچہ وہ احد کی جنگ میں شہید ہوگیا۔

 

عنوان : تاریخ اسلام

پیشکش : شعبۂ تحریر و پیشکش تبیان

بشکریہ پایگاہ اطلاع رسانی دفتر آیت اللہ العظمی مکارم شیرازی

 


متعلقہ تحریریں :

ان کو یہیں دفن کر دو ان کی دعا مستجاب ہوئی

شہیدوں کی میت پر

احد میں مسلمانوں کی شکست کے اسباب کا جائزہ

نفسیاتی سرد جنگ

شہیدوں کے پاکیزہ جسم کے ساتھ کیا سلوک ہوا؟