• صارفین کی تعداد :
  • 4470
  • 7/16/2013
  • تاريخ :

ماہ رمضان کي برکت اور قرآن پڑھنا

ماہ رمضان کی برکت اور قرآن پڑھنا

قرآن کي روشني ميں ماہ رمضان  کي فضيلت (حصّہ اوّل) 

يہ وہ ماہ مبارک  ہے جس ميں جنت کے دروازے کھول دئے  جاتے ہيں ، نا صرف جہنم کے دروازے بند کردئے جاتے ہيں بلکہ  شيطانوں کو بھي  بند کر ديا جاتا ہے اور نيکيوں کے اجر اللہ پاک اپني  مہرباني سے بڑھا کر بے حد و حساب فرما ديتے ہيں - اس مہينہ اور اس کي  ان پر برکت گھڑيوں کي  قدر جانيں اور ان سے خوب فائدہ اٹھائيں اس لئے کہ نہيں معلوم کہ اگلے سال يہ موقع اور يہ بابرکت مہينہ ہميں نصيب هو يا نہ هو .

لَيْلَةُ الْقَدْرِ خَيْرٌ مِّنْ اَلْفِ شَهْرٍ  (القدر، 97 : 3)

" شبِ قدر (فضيلت و برکت اور اَجر و ثواب ميں) ہزار مہينوں سے بہتر ہے"

  ماہ مبارک عبادت و بندگي کا مہينہ هے امام صادق عليہ السلام فرماتے ہيں : ((قال اللہ تبارک و تعالٰي : يا عبادي الصّديقين تنعموا بعبادتي في الدّنيا فانّکم تتنعّمون بھا في الآخرة))

 خدا وند متعال فرماتا هے: اے ميرے سچے بندو ! دنيا ميں ميري عبادت کي نعمت سے فائدہ اٹھاۆ تاکہ اس کے سبب آخرت کي نعمتوں کو پا سکو .

  يعني اگر آخرت کي بے بہا نعمتوں کو حاصل کرنا چاہتے هو تو پھر دنيا ميں ميري نعمتوں کو بجا لاۆں اس لئے کہ اگر تم دنيا ميں ميري نعمتوں کي قدر نہيں کرو گے تو ميں تمہيں آخرت کي نعمتوں سے محروم کر دوں گا .اور اگر تم نے دنيا ميں ميري نعمتوں کي قدر کي تو پھر روز قيامت ميں تمھارے لئے اپني نعمتوں کي بارش کردوں گا  .

انہيں دنيا کي نعمتوں ميں سے ايک ماہ مبارک اور اس کے روزے ہيں کہ اگر حکم پرور دگار پر لبيک کہتے هوئے روزہ رکھا ، بھوک و پياس کو تحمل کيا تو جب جنّت ميں داخل هو گے توآواز قدرت آئے گي:

 ((کلوا و اشربوا ھنيئا بما اءسلفتم في الاءيّام الخالية ))

ترجمہ: اب آرام سے کھاۆ پيو کہ تم نے گذشتہ دنوں ميں ان نعمتوں کا انتظام کيا هے .

  ماہ مبارک کے روز و شب انسان کے لئے نعمت پروردگار ہيں جن کا ہر وقت شکر ادا کرتے رہنا چاہئے . ليکن سوال يہ پيدا پوتا هے کہ ان بابرکت اوقات اور اس زندگي کي نعمت کا کيسے شکريہ ادا کيا جائے ، امام صادق عليہ السلام فرماتے ہيں:

((من قال اءربع مرّات اذا اءصبح ، اءلحمد للہ ربّ العالمين فقد اءدّٰي شکر يومہ و من قالھا اذا اءمسٰي فقد اءدّٰي شکر ليلتہ))

جس شخص نے صبح اٹھتے وقت چار بار کہا : ((الحمد للہ ربّ العالمين ))اس نے اس دن کا شکر ادا کرديا اور جس نے شام کو کہا اس نے اس رات کا شکر ادا کرديا .

  کتنا آسان طريقہ بتاديا امام عليہ السلام نے اور پھر اس مہينہ ميں تو ہر عمل دس برابر فضيلت رکھتا هے ايک آيت کا ثواب دس کے برابر ، ايک نيکي کا ثواب دس برابر  (جاری ہے)

 

متعلقہ تحریریں:

علم قرات قرآن علوم اسلامي ميں سے قديم ترين علم ہے

جمع قرآن سے متعلق متضاد اور متصادم روايات