• صارفین کی تعداد :
  • 1887
  • 12/21/2008
  • تاريخ :

الجھن

ناراض آدمی

تیرا میرا رشتہ کچھ ایسا الجھا ہے
اس کو سلجھاتے سلجھاتے

 

اپنے دل کی پوریں زخمی کر بیٹھا ہوں

رشتہ شائد سلجھ نہ پاۓ

 

لیکن اس کو سلجھانے کی دھن میں جاناں

سارے خواب بھلا بیٹھا ہوں

 

اپنا آپ گنوا بیٹھا ہوں

 

شاعر کا نام : وصی شاہ

پیشکش : شعبۂ تحریر و پیشکش تبیان


متعلقہ تحریریں:  

 میری آنکھوں میں آنسو پگھلتا رہا، چاند جلتا رہا

 ہم سے کیا پوچھتے ہو ہجر میں کیا کرتے ہیں

 ترے گلے میں جو بانہوں کو ڈال رکھتے ہیں