• صارفین کی تعداد :
  • 4145
  • 9/3/2012
  • تاريخ :

پلاسٹک سرجري کا طريقۂ کار

پلاسٹک سرجري کا طريقۂ کار

پلاسٹک سرجري  کے مقاصد اور ميدانِ عمل

پلاسٹک سرجري  اور نيا زمانہ اور نئے  مسائل

پلاسٹک سرجري  کا تاريخي پس منظر

 پلاسٹک سرجري کے  ليے  عموماً درج ذيل طريقوں ميں سے  کوئي طريقہ اختيار کيا جاتا ہے  :

-       اعضاء کے  عيب يا نقص کو دور کرنے  کے  ليے  آپريشن کيے  جاتے  ہيں-

-       موٹے  لوگوں  ميں  بدن سے  زائد چربي کو زائل کر کے  اسے  دبلا اور چھريرا بنايا جاتا ہے-

-       بدن کے  دوسرے  حصوں سے  چربي کو منتقل کر کے  کولہے  ابھارے  جاتے  ہيں-

-       جسم جھلس جانے  کي صورت ميں ليفي انسجہ (Fibrous tissues) جن ميں  بہت زيادہ کھنچاۆ ہوتا ہے، انھيں  آپريشن کر کے  نکال ديا جاتا ہے اور صحيح جلد کو ملا کر جوڑ ديا جاتا ہے-

-       جلد کو خوب صورت بنانے  کے  ليے  Laser Techniqueسے  مدد لي جاتي ہے-

-       ايک عام اور اہم طريقہ Microsurgery کہلاتا ہے- اس ميں کسي عضو کے  نقص کو چھپانے  کے  ليے  جلد،عضلہ،ہڈي يا چربي کے  نسيج (Tissue) کو دوسري جگہ سے  متاثرہ جگہ تک منتقل کيا جاتا ہے  اور وہاں کي عروق دمويہ کو جوڑ کر خون کي سپلائي جاري کر دي جاتي ہے- يہ تکنيک جلد کي منتقلي کے  سلسلے  ميں  کثرت سے  مستعمل ہے- اسے  Skin grafting کہتے  ہيں-

حل طلب مسائل

پلاسٹک سرجري کے  سلسلے  ميں درج بالا تفصيلات کي روشني ميں کچھ سوالات ابھرتے  ہيں جنھيں شريعت اسلامي کي روشني ميں حل کيا جانا موجودہ دور کا اہم تقاضا ہے- وہ سوالات درج ذيل ہيں :

1-     کوئي ايساعيب جوانسان ميں پيدائشي طورپرموجودہواوراس کي وجہ سے  وہ بد ہيئت نظر آ رہا ہو اور وہ عيب عام قانون فطرت کے  خلاف ہو،کيا اس کو دور کرنے  کے  ليے  پلاسٹک سرجري کرانا جائز ہو گا؟

2-     کوئي ايساعيب جو پيدائشي طور پر نہ ہو،بلکہ کسي حادثہ کي وجہ سے  پيدا ہو گيا ہو اور اس کي وجہ سے  انسان بد ہيئت معلوم ہو رہا ہو، کيا اس کے  علاج کيلئے  پلاسٹک سرجري کرانا درست ہو گا؟

3-     جسم انساني کي بعض ہيئتيں عام قانونِ فطرت کے  خلاف نہيں ہوتيں اور ان کا شمار عيب ميں نہيں کيا جاتا،ليکن بعض افراد کو وہ پسند نہيں ہوتيں- اسي طرح بعض ہيئتيں بعض افرادکوپسندہوتي ہيں،ليکن وہ ان کے  بدن ميں نہيں پائي جاتيں- کيا ناپسنديدہ ہيئتوں کو زائل کرنے  اور پسنديدہ ہيئتوں کو حاصل کرنے  کے  ليے  پلاسٹک سرجري کرانا جائز ہے ؟

4-     بعض عيوب يا ناپسنديدہ ہيئتيں عمر زيادہ ہونے  کے  ساتھ فطري طور پر ہر شخص کے  بدن ميں ظاہر ہوتي ہيں- کيا ان عيوب يا ہيئتوں  کے  ازالہ کے  ليے  آپريشن کرانا جائز ہے ؟

5-    کيا کم عمر اور خوب صورت نظر آنے  کے  ليے  پلاسٹک سرجري کرائي جاسکتي ہے ؟

6-     شناخت چھپانے  کے  ليے  پلاسٹک سرجري کرانے  کا کيا حکم ہے ؟

تحرير: ڈاکٹر محمد رضي الاسلام ندوي

پيشکش: شعبہ تحرير و پيشکش تبيان