• صارفین کی تعداد :
  • 1733
  • 12/16/2008
  • تاريخ :

تمہارے ہاتھوں کے لیے ایک دعا

دعا

میرے مولا یہ حسین ہاتھ سلامت رکھنا
ایسا لگتا ہے جو یہ ہاتھ دعا کو اٹھیں

 

خود فرشتے چلے آتے ہوں زمیں کی جانب

سونپ کر مر مریں ہاتوں کی ہتھیلی کو حناء

 

جو بھی مانگا ہو وہ چپ چاپ دیے جاتے ہوں

 میرے مولا یہ حسیں ہاتھ سلامت رکھنا

 

ان کی خوشبو سے معطر ہے مرا سارا وجود

انہیں ہاتھوں میں مرے خواب چھپے ہیں مولا

 

انگلیاں مجھ کو محبت میں بگھو دیتی ہیں

انہی پوروں نے مرے درد چنے مولا

 

ان کی رگ رگ میں محبت ہی محبت رکھنا

میرے مولا یہ حسین ہاتھ سلامت رکھنا

 

انہی ہاتھوں کی لکیروں میں مقدر ہے مرا

یہ جو کونے میں ستارہ ہے سکندر ہے مرا

 

خواب سے نرم خیالوں کی طرح نازک ہیں

ان کے ہر لمس میں میرے لیے چاہت رکھنا

 

میرے مولا یہ حسین ہاتھ سلامت رکھنا

میرے مولا  یہ حسین ہاتھ سلامت رکھنا

 

پیشکش: شعبۂ تحریر و پیشکش تبیان


متعلقہ تحریریں:

 تمہاری یاد سے ہر پل سجا ہوا کیمپس

 آج ہمیں یہ بات سمجھ میں آئی ہے