• صارفین کی تعداد :
  • 9398
  • 1/13/2014
  • تاريخ :

چيني لوک کھاني

چینی لوک کھانی

گۓ وقتوں ميں کسي گاۆں ميں اک لکڑ ہارا رھتا تھا؛وہ روز جنگل ميں جاتا اور لکڑياں کاٹ کر فروخت کرتا اس طرح تنگي ترشي سے گھر چل رھا تھا؛ليکن اسکي بيوي نھايت تنک مزاج اور بدخو تھي ھر وقت زبان پر شکوہ رھتا؛کرنا خدا کا يہ ھوا کہ لکڑ ھارے کي شير سے دوستي ھوگئ؛اب شير اسکو لکڑياں چننےميں مدد کرتا اور اس طرح اسکي زندگي ميں قدرے آسودگي آ گئ؛اک دن لکڑ ہارے نے اپني دوستي کا ذکر اپني بيوي سے کيا اور کھا کہ ميں اپنے دوست کو کسي دن اپنے گھر بلانا چاھتا ھوں؛بيوي بھت چيخي چلائي کا بھلا درندوں اور انسان کي کيا دوستي؛لکڑ ھارے کے سمجھانے سے وہ وقتي طور سے خاموش ھو گئ؛اک رن موقع مناسب ديکھ کر لکڑ ھارا شير کو گھر لي آيا بيوي نے شير کو ديکھتے ھي چلانا شروع کر ديا اور خوب برا بھلا کھا؛يہ سن کر شير بھت آزردھ ھوا اور لکڑ ھارے سے کھا کوئي بات نھيں بس تم ايسا کرو کہ اپنے کلھاڑے سے ميرے سر پر اک ضرب لگا دو؛لکھڑہارے نے کھا ميں اپنے دوست کے ساتھ ايسا کيسے کر سکتا ھوں جب شير نے زيادہ اصرار کيا تو اسنے شير کے سر پر ضرب لگا دي جھاں سے خون کا فوارھ جاري ھو گيا اور شير واپس جنگل چلا گيا؛لکڑھارا کئي دن تک خوف و ندامت سے جنگل نہ گيا؛آخر اک دن بھوک سے مجبور ھو کر ڈرتے ڈرتے جنگل کا رخ کيا ابھي وہ  درخت پر چڑھا لکڑياں کاٹ ھي رھا تھا کہ دور سے شير آتا نظر آيا خوف کے مارے اسکا برا حال ھو گيا ؛شير عين اس درخت کے نيچے آن کھڑا ھوا؛اور اپنے دوست سے کھا کہ گھبراۆ نھيں ھم اب بھي دوست ھيں تم ذرا نيچے آۆ؛لکڑھارا ڈرتے ڈرتے نيچے آياشير نے کھا تم ميرے سر کے بال اٹھا کر ديکھو وھ زخم ھے يا بھر گيا؛لکڑ ھارے نے ديکھا اور بتايا کہ اسکا تو نشان تک نھيں شير نے جواب ديا کہ دوست تمھاري بيوي کے باتوں کے زخم ميرے دل ميں اب بھي تازہ ھيں -  (جاری ہے)


متعلقہ تحریریں:

مخلص اور بہتر دوست

سب سے قيمتي