• صارفین کی تعداد :
  • 2633
  • 8/17/2011
  • تاريخ :

حروف تھجي کي انداز اور ادا ئيگي

قرآن حکیم

حروف تھجي کي انداز، ادا ئيگي، احکام اور کيفيات کے اعتبار سے مختلف قسميں ھيں -

حروف مد

واو ، ي ، الف - ان حروف کو اس وقت حروف مد کھا جاتا ھے جب  " واؤ  " سے پھلے پيش " الف" سے پھلے زبر اور "  ي " سے پھلے زير ھو اور اس کے بعد ھمزہ يا کوئي ساکن حرف ھو جيسے سوء - غفور-جآء - صآد - جيظ“ء ( ج ي ء ) جيظ“م وغيرہ -

بعد کے ھمزہ يا حرف ساکن کو سبب کھتے ھيں- مد کے معني آواز کے کھينچنے کے ھيں -

حروف لين

" واو" اور " ي" سے پھلے زير ھو تو ان دونوں کو حروف لين کھتے ھيں-

" لين "  کے معني ھيں نرمي- ان حالات ميں يہ دونوں حروف ، مد کو آساني سے قبول کر ليتے ھيں جيسے خوفٌ - طير -

اگر حرف لين کے بعد کوئي حرف ساکن بھي ھے تو اس حرف پر مد لگانا ضروري ھے جيسےکظ“ھظ“يٰظ“عظ“صظ“ ( کآف ھا يا عين صاد) کہ اس کلمہ ميں مثلا ًعين کي " ي " لين ھے اور اس کے بعد نون ساکن ھے جس کي بنا پر عين کي " ي " کو مد کے ساتھ پڑھنا ضروري ھے -

حروف شمسي

وہ حروف ھيں جن سے پھلے اگر   الف " لام  آ جائے تو ملا کر پڑھنے ميں ساقط ھو جاتا ھے جيسے ت، ث، د، ذ، ر، ز، س، ش، ص، ض، ء 1 ل ، ن ، - ملا کر پڑھتے وقت ان کا الف لام ساقط ھو جاتا ھے جيسے و الطور - و الشمس ، و التين و غيرہ -

حروف قمري

وہ حروف ھيں جن کے پھلے الف لام آجائے تو ملانے ميں بھي پڑھا جاتا ھے مگر الف نھيں پڑھا جاتا جيسے ا، ب، ج، ح، غ، ف، ق، ک، م- و- ھ ، ي- کہ انکو ملا کر پڑھنے ميں لام ساقط نھيں ھوتا جيسے و القمر، و الکاظمين، و المجاھيلن، و الخيل و الليل و غيرہ -

 

ahlulbaytportal


متعلقہ تحريريں:

عُلوم الِقُرآن

علوم قرآن سے کيا مراد ہے؟

اسامي قرآن کا تصور

قرآني معلومات

قرآن مجيد کي آيات ميں محکم اور متشابہ سے کيا مراد ہے؟