• صارفین کی تعداد :
  • 887
  • 9/18/2010
  • تاريخ :

یوم یکجہتی، پاک ایران دوستی کا آئینہ دار

ایران

گذشتہ جمعرات کو  پورے ایران میں، پاکستان میں سیلاب سے متاثرہونے والوں کے ساتھ یوم یکجہتی منایا گیا.

رہبر انقلاب اسلامی کے فرمان پر لبیک کہتے ہوئے ملت اور حکومت ایران نے پاکستان میں سیلاب کے نتیجے میں ہونے والی بھیانک تباہی پر اور کروڑوں متاثرین کے ساتھ اظہار ہمدردی کے طور پر اس دن کو قومی سطح پرمنانے کا اعلان کیا تھا جس کے تحت دارالحکومت تہران سمیت پورے ایران میں بڑے پیمانے پر پاکستان میں سیلاب سے متاثرین کے لئے امدادی وصول کرنے کے کیمپ لگائے گئےتھے۔

اسلامی جمہوریہ ایران اب تک امداد کی دسیوں کھپیں پاکستان روانہ کرچکا ہے اور حکومت کی طرف سے سیلاب متاثرین کے لئے دوکڑور ڈالر کی رقم کا اعلان کیا گيا ہے۔

واضح رہے کہ رہبرانقلاب اسلامی نے اپنے خطبہ عید میں پاکستان کے تباہ کن سیلاب کو ایک فوری مسئلہ قراردیتے ہوئے اسے ایک بڑی مصیبت سے تعبیر کیا تھا عالم اسلام سے کہا تھا کہ فوری طورپر پاکستانی عوام کی مدد کریں ۔

ہبرانقلاب نے عالم اسلام، اقوام عالم، مسلم ملکوں اسلامی کانفرنس تنظیم کوخطاب کرتے ہوئے فرمایا کہ سب کومل کرپاکستان کے سیلاب زدگان کی مدد کرنا چـاہئے آپ نے فرمایا کہ آج عالم اسلام کا سب سے فوری اور ہنگامی مسئلہ پاکستان کا سیلاب ہے ۔

رہبر انقلاب اسلامی نے اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ پاکستان کے سیلاب زدگان نے تمام تر مشکلات و مصائب کے باوجود ماہ مبارک رمضان میں روزے رکھے فرمایا کہ آج عید کا دن ہے اجتماع کا دن ہے آج امت اسلامیہ کا دن ہے بنابرایں سب کو کمرہمت باندھنا چاہئے اورپاکستان کے سیلاب زدگان کی مدد کرنی چاہیے ۔

آپنےُ فرمایا البتہ اسلامی جمہوریہ ایران کی حکومت نے پاکستان کے سیلاب زدگان کی مدد کی ہے اور ایران کے عوام نے بھی مختلف عناوین سے مدد کے لۓ اقدامات کئے ہیں لیکن جس بڑے پیمانے پر سیلاب سے تبا ہی ہوئی ہے اس کے پیش نظر جتنی مدد کی گئی ہے وہ ناکافی ہے اور ہر طرح سے مدد کرنا ہمارا فریضہ ہے۔

رہبرانقلاب اسلامی نے فرمایا کہ یہ صرف ملت ایران سے ہی خطاب نہيں ہے بلکہ دنیا کے تمام مسلمانوں سے خطاب ہے سب کوچاہئے کہ وہ پاکستان کے سیلاب زدگان کی مدد کے لئے آگے آئيں۔

آپ نے فرمایا کہ پاکستان میں آنےوالے سیلاب کا نام صرف سیلاب ہے لیکن درحقیقت یہ پاکستان کے عوام کے لئے ایک بہت بڑی مصیبت ہے انھوں نے فرمایا کہ پاکستان کی قوم ایک مومن دیندار متدین اورہراعتبار سے پیش قدم قوم رہی ہے جو آج اتنی بڑی مصیبت میں گرفتار ہے ۔

آپ نے فرمایا کہ

دریائے سندھ شمال سے جنوب تک طغیانی کررہا ہے اورشمالی پاکستان سے لے کر جنوبی پاکستان تک کا علاقہ پانی میں ڈوب گیا ہے جس کے نتیجے میں متاثرہ علاقوں کے لوگوں کی زندگیاں اجڑگئی ہيں بچے بوڑھے اورمرد وخواتین سب کے سب بے بس ومجبور ہوگئے ہيں ان کے پاس کھانے کوکھانا نہيں ہے پہننے کولباس نہيں ہے اورسرچھپانے کے لئے جگہ نہیں ہے انھیں آج ہرچیزکی ضرورت ہے۔

انھوں نے فرمایا کہ اب تک جتنی بھی امداد دی گئی ہے وہ ناکافی ہے پاکستان کوبہت بڑا جھٹکا لگا ہے ۔

رہبرانقلاب اسلامی نے ساتھ ہی پاکستان میں امن وامان اورسلامتی کی بگڑتی ہوئی صورت حال پر بھی اپنی تشویش کا اظہار کیا۔

آپنے فرمایا کہ تسلط پسند اورموقع پرست حکومتیں اس موقع سے فائدہ اٹھارہی ہيں اس درمیان بعض بیرونی حکومتوں کی کوشش ہے کہ پاکستان کو اپنے فوجی اڈے میں تبدیل کرلیں یہ ایک اورتشویش کی بات ہے لیکن ہم امید کرتے ہیں کہ پاکستان کے بہادرعوام اس مسئلہ کی جانب متوجہ ہوں گے اورانشاء اللہ خدا ان کی مدد کرے گا ۔ بہر یہ رہبر انقلاب اسلامی کی ملت پاکستان سے محبت اور الفت کا ہے نتیجہ ہے کہ آج پورے ایران میں پاکستانی سیلاب متاثرین کے ساتھ قومی اور حکومتی سطح پر یکجہتی کا اظہار کیا جارہا ہے ۔ یقینتا ملت پاکستان اس وقت جس مشکل سے ْدوچار ہے اس سے رہائی کے لئے اسے جس امداد کی ضرورت ہے ایران کی مسلمان قوم اس میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیگی ۔

اردو ریڈیو تہران