• صارفین کی تعداد :
  • 3643
  • 5/8/2010
  • تاريخ :

سانحہ ہفتم تیر (حصّہ سوّم)

سانحہ ہفتم تیر  کے شہداء کی یادگار

قوم کا ایمان، صبر اور بیداری، انقلاب کا قیمتی ذخیرہ

سانحہ ہفتم تیر (اٹھائيس جون) کے بارے میں ایک جملہ عرض کروں گا۔ ایک اہم چیز جس نے اس واقعے میں لوگوں کی توجہ اپنی طرف مبذول کرائی یہ تھی کہ پیکر انقلاب پر دشمن کی ضرب جتنی کاری ہوتی جاۓ گی لوگوں میں ایمان صبر اور استقامت کاجذبہ بھی اتنی ہی بڑھتا جاۓ گا۔ دشمن نے حکومت کے ستر بڑے عہدہ دار جن میں شہید بہشتی جیسی شخصیات بھی شامل تھیں ایک ساتھ اسلامی حکومت سے چھین لۓ اور وہ بھی بڑے المناک اور بھیانک طریقے سے، لیکن آپ اس قوم کا رد عمل دیکھیں! لوگوں نے اور شہداء کے قابل قدر اہل خانہ نے اپنی استقامت و پائيداری، صبر و تحمل اورایمان و ایقامن سے دشمن کو ایسا جواب جو دشمن کی عقل و فہم سے بالاتر تھا۔

قوم نے انقلاب کی سینہ سپر ہوکر حفاظت کی اور دشمن کی امیدوں پر پانی پھیر دیا اس طرح ایران کا نام روشن ہوا۔ ہمیشہ اسی طرح ہوتا رہے گا۔ جب تک لوگوں کا صبر و ایمان اور جذبہ استقامت انقلاب اور حکومت کے لئے سائباں بنا رہے گا، دشمن کو انقلاب پر وار کرنے اور نقصان پہنچانے کی کوششو سے کچھ بھی حاصل نہیں ہوگا۔ انقلاب روز بروز پروان جڑھتا جاۓ گا۔ ہمارے بزرگوار شہید آیت اللہ بہشتی اسلامی حکومت میں ایک مثالی اور نمایاں شخصیت تھے جو اس ( دہشت گردی کے ) واقعے میں ہم سے چھن گۓ؛ لیکن ان کی یاد زندہ رہی، ان کے اور ان کے دوستوں کے خون سے انقلاب کی آبیاری ہوئی اور یہ پودھا مزید مستحکم ہوا۔ یہ ایک بڑا سبق ہے.

سانحہ ہفتم تیر (اٹھائيس جون1981) کے شہداء کے اہل خانہ اور عدلیہ کے عہدہ داروں کے ساتھ ملاقات میں رہبر انقلاب اسلامی کے خطاب سے اقتباس 2000-6-27

 

https://urdu.khamenei.ir


متعلقہ تحریریں:

اسلامی جمہوریہ ایران کی مسلح افواج کا دن

یوم اسلامی جمہوریۂ ایران

12 بہمن سنہ 1357 ہجری شمسی