• صارفین کی تعداد :
  • 3577
  • 4/7/2010
  • تاريخ :

خوانچے والا

لڈو

خوانچے والے خوانچہ لا
خوانچہ لا
منے مجھ کو دام دکھا
دام دکھا
پہلے میں دیکھوں تو ذرا
لڈو تیرے کیسے ہیں
کیسے ہیں
اچھے ہیں تو لے لوں گا
جیب میں میرے پیسے ہیں
پیسے ہیں
لے لے پھر جھگڑا ہے کیا
سامنے تیرے رکھے ہیں
رکھے ہیں
پہلے بھی تو لیتا ہے
پہلے بھی تو نے چکھے ہیں
چکھے ہیں
میں نہ لوں گا ہوں ہوں ہوں
یہ لڈو تو چھوٹے ہیں
چھوٹے ہیں
میں بھی پھر اک بات کہوں
پیسے تیرے کھوٹے ہیں
کھوٹے ہیں

 

شاعر کا  نام : صوفی غلام مصطفی  تبسم

پیشکش : شعبۂ تحریر و پشکش تبیان


متعلقہ تحریریں:

نہر میں آگ

کالا ریچھ