• صارفین کی تعداد :
  • 335
  • 3/30/2016
  • تاريخ :

دل میں بس جانے والے 15 مقامات پہلا حصہ

دل میں بس جانے والے 15 مقامات پہلا حصہ


گھومنے پھرنے کا دل کس کا نہیں کرتا اور اکثر اس کے لیے لوگ مختلف خوبصورت مقامات کا رخ بھی کرتے ہیں۔
کچھ افراد کے لیے کسی ساحلی مقام پر شفاف پانیوں کے سامنے بیٹھنا بہترین تجربہ ثابت ہوتا ہے جبکہ کچھ پرفضاء اور سرسبز وادیوں کی سیر کو ترجیح دیتے ہیں۔
اور ایسے لوگوں کی بھی کمی نہیں جو گنجان آباد شہروں یا کسی رومانوی شہرت رکھنے والے شہر جیسے پیرس کے سحر میں گرفتار ہوتے ہیں۔
تو ہم نے بھی کچھ ایسے ہی مثالی مقامات منتخب کرنے کی کوشش کی ہے جو ہوسکتا ہے کہ آپ کے دلوں میں بھی اتر جائے۔
گوپس، گلگت بلتستان
گوپس ضلع غذر کا مرکزی اور انتہائی خوبصورت مقام ہے۔ مشہور فوٹو گرافر اور ڈان کے بلاگر سید مہدی بخاری کے الفاظ میں "وادی سنسان تھی۔ پانیوں پر بوندیں پڑتیں تو چھوٹے چھوٹے دائروں میں چھوٹی چھوٹی لہریں دوڑتی جاتیں۔ پھر بارش رکی۔ سورج بدلی کی اوٹ سے جھانکا۔ قوس قزاح کے رنگ بکھرنے کو تھے مگر شاید کہیں ٹھہر چکے تھے یا میری دیوانہ وار حالت کو دیکھتے ہوئے قدرت نے اپنا فیصلہ بدل لیا تھا"۔ یہاں کی سیر ایسا تجربہ ہوتا ہے جسے بھول پانا ناممکن ہے۔
گوجال
وادی گوجال چین اور افغانستان کے ساتھ واقع پاکستان کا سرحدی علاقہ ہے۔ چین کے ساتھ گوجال کی سرحد خنجراب کے مقام پر ملتی ہے جو سطح سمندر سے تقریبا 15,397 فٹ بلندی پر ہونے کی وجہ سے سالہا سال برف سے ڈھکا رہتا ہے۔ شمال مغرب میں گوجال کا علاقہ چپورسن واقع ہے جس کی سرحدیں براہ راست افغانستان کے علاقے واخان سے لگتی ہیں۔
ہنزہ نگر
پاکستان کا ایک اور خوبصورت مقام اور بقول سید مہدی بخاری کے " شمال میں بسا ضلع ہنزہ نگر خوابوں کا نگر ہے۔ ہنزہ اور نگر ماضی میں دو الگ ریاستیں رہیں، اور ان دونوں کو بیچ میں بہتا دریائے ہنزہ الگ کرتا تھا"۔ وہ مزید بتاتے ہیں "نگر کو برف پوش پہاڑوں کی سرزمین کہا جائے تو غلط نہ ہو گا۔ راکاپوشی، نگر کی وادی غلمت میں واقع ہے جبکہ دران پِیک نگر کی وادی مِناپن میں سینہ تانے کھڑی ہے۔ ہوپر تو نگر کے ماتھے کا جھومر ہے، جہاں سے ایک راستہ پاکستان کی بلند ترین جھیل رش لیک کو نکلتا ہے تو وہیں پر ہوپر گلیشیئر، گولڈن پِیک، برپو گلیشیئر، بولتر گلیشیئر، اور میار گلیشیئر ظہور پذیر ہیں"۔
اسکردو
قدرت نے اس مقام کو ہر زیور سے آراستہ کیا ہے۔ جھیلیں، صحرا، دریا، باغات، دنیا کی بلند ترین چوٹیاں، کیا ہے جو اسکردو میں نہیں۔ بالکل بلتی دلہن کی طرح سجی یہ وادی سر سے پاؤں تک قابلِ دید ہے۔
پھوکیت، تھائی لینڈ
جو لوگ ساحلی مقامات کو ترجیح دیتے ہیں ان کے لیے تھائی لینڈ کا صوبہ پھوکیت مثالی مقام ثابت ہوسکتا ہے جہاں کے خوبصورت ساحل دیکھنے والوں کو دل بھی چرا لیتے ہیں جبکہ وہاں اچھے ریزورٹس کی بدولت رہائشی سہولیات بھی مناسب ہوتی ہیں۔ اس کے علاوہ سورج کے طلوع و غروب ہونے کا منظر بھی دیکھنے والوں پر سحر طاری کردیتے ہیں۔
بورا بورا آئی لینڈ
فرنچ پینسلوانیا کے جزیرے بورا بورا کو دنیا کا سب سے فوٹو جینک مقام قرار دیا جاتا ہے، یہاں کے خوبصورت ساحلی مقامات برسوں سے اسکوبا ڈائیورز کی جنت بنے ہوئے ہیں جبکہ نیلگوں پانیوں اور گھونگھوں کی چٹان نے اس جگہ کی خوبصورتی کو چار چاند لگا دیئے ہیں۔
جاری ہے۔۔۔