• صارفین کی تعداد :
  • 576
  • 12/10/2011
  • تاريخ :

ايراني فوج کي توانائي پر امريکي حکام کي حيرت

 محمد خزاعي

اقوام متحدہ ميں اسلامي جمہوريہ ايران کے سفير محمد خزاعي نے امريکي ڈرون طيارے کے واقعے کے سلسلے ميں امريکہ کے حکام اور ذرائع ابلاغ کے بيانات کو اسلامي جمہوريہ ايران کي دفاعي صلاحيتوں پر ان کي شديد حيرت کا نتيجہ قرار ديا ہےـ

ابنا: محمد خزاعي نے نيويارک ميں ہمارے نمائندے سے گفتگو کرتے ہوئے اس واقعے کے سلسلے ميں کہا کہ امريکي کہہ چکے ہيں کہ يہ طيارہ انتہائي جديد ٹکنالوجي کي بنياد پر تيار کيا گيا ہے جسے نہ تو راڈار پر ديکھا جا سکتا ہے اور نہ ہي حملے کا نشانہ بنايا جا سکتا ہے ليکن دنيا نے ديکھ ليا کہ ايران کي زيرک فوج نے کس طرح نا ممکن قرار ديئے جانے والے کام کو ممکن کر دکھايا ـ

اقوام متحدہ ميں ايران کے مندوب نے سي اين اين کے ساتھ اپنے انٹرويو ميں بھي کہا کہ امريکي ذرائع ابلاغ کي جانب سے يہ سوال کيا جانا کہ کيا ايران اس طيارے کو ديگر ممالک منجملہ چين کو دے سکتا ہے، در حقيقت ايران کي صلاحيتوں سے امريکہ کي گہري تشويش کي علامت ہےـ

محمد خزاعي نے امريکہ کے ذريعے ايران کي فضائي حدود کي خلاف ورزي پر تہران کے باضابطہ احتجاج کے بارے ميں کہا کہ اقوام متحدہ کے سکريٹري جنرل بان کي مون کو خط لکھ ديا گيا ہے ـ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ اور رکن ممالک سے يہ توقع کي جاتي ہے کہ اقوام متحدہ کے منشور کے مطابق ايک ملک کے ذريعے دوسرے ملک کي فضائي حدود کي خلاف ورزي کي مذمت کريں گے ـ

اقوام متحدہ ميں ايران کے نمائندے نے سلامتي کونسل کے يکطرفہ اقدامات پر شديد تنقيد کرتے ہوئے کہا کہ دنيا کو معلوم ہے کہ سلامتي کونسل بعض طاقتور رکن ممالک کا حربہ بن کر رہ گئي ہےـ محمد خزاعي نے کہا کہ اگر امريکي طياروں نے آئندہ بھي ايران کي فضائي حدود کي خلاف ورزي جاري رکھي تو ايران اپنا يہ قانوني حق محفوظ سمجھتا ہے کہ اپني ارضي سالميت اور فضائي حدود کي حفاظت کے لئے اقدامات کرے اور پھر نتائج کي ذمہ دار جارح طاقتيں ہوں گي