• صارفین کی تعداد :
  • 1629
  • 11/28/2011
  • تاريخ :

ہر لمحہ زندگي کا مکمل حيات ہے

بسم الله الرحمن الرحیم

مدينہ ميں وارد ہوتے ہي سرور کائنات (ص) نے انسان کي تربيت کا فريضہ انجام دينا شروع کرديا، جن کے نتيجہ ميں روز بروز شائستہ، شجاع، مدبر، مومن، با معرفت اور حکيم افراد مدينہ ميں ظاہر ہوئے جس ميں ہر ايک کردار کي اس بلند و بالا عمارت ميں ايک اہم اور مستحکم ستون کي حيثيت رکھتا تھا-

آنحضرت (ص) کا ايک حيرت انگيز شاہکار يہ تھا کہ آپ (ص) نے ان دس برسوں ميں ايک لمحہ بھي برباد نہيں ہونے ديا- تاريخ گواہ ہے کہ آپ (ص) نے کبھي بھي معنويت و ہدايت اور تعليم و تربيت کي نور افشاني ميں ذرہ برابر تامل نہيں کيا- آپ (ص) کا سونا جاگنا، کوچہ و بازار ميں آنا جانا، عبادت و بندگي، گھريلو زندگي اور آپ (ص) کے وجود سے متعلق ہر شئے ايک درس کا عنوان رکھتي ہے- حضور (ص) کي عمر مبارک ميں عجيب برکت پائي جاتي ہے! ايسي بابرکت زندگي جس نے پوري تاريخ کو اپني طرف متوجہ کرليا اور جو پوري تاريخ پر اثر انداز رہي-

مساوات و برابري، اخوت و برادري، عدل و انصاف اور انسان دوستي جيسي بہت سي مقدس تعليمات جن کے تقدس کو انسان صديوں بعد سمجھ پايا ہے، آئين محمدي (ص) کے صدقے ميں ہي ان کا تقدس برقرار ہے- ديگر اديان کي تعليمات ميں يا تو ان اعليٰ صفات کا وجود ہي نہيں تھا يا کم ازکم انہيں عروج نہيں ملا تھا-

ولي امر مسلمين حضرت آيت اللہ سيد علي خامنہ اي کے خطاب سے اقتباس

 (خطبات نماز جمعہ، تہران، 138ظ -2-28)

پيشکش : شعبۂ تحرير و پيشکش تبيان