• صارفین کی تعداد :
  • 581
  • 7/30/2011
  • تاريخ :

سيد حسن نصراللہ: جنگ نے اسرائيل کي کمر توڑ دي ہے

سیدحسن نصر اللہ
حزب اللہ لبنان کے سربراہ سيد حسن نصراللہ نے کہا ہے کہ تينتيس روزہ جنگ نے اسرائيل کو زبردست خطرات سے دوچار کر ديا ہے ۔

ابنا: يہ بات انہوں نے منگل کي شب ويڈيو کانفرنس کے ذريعے ، تينتيس روزہ جنگ ميں کاميابي کي سالگرہ کے موقع پر منقعدہ ايک تقريب سے خطاب کر رہے تھے - سيد حسن نصراللہ نے کہا کہ تينتيس روزہ جنگ نے اسرائيلي فوج کي کمر توڑ دي ہے اور اسکے اندر بداعتمادي کي فضا پيدا ہوگئي ہے-

حزب اللہ کے سربراہ کا کہنا تھا کہ تحريک مزاحمت کے جوانوں نے اس جنگ کے دوران ہر محاذ پر دشمن کا ڈٹ کر مقابلہ کيا ہے-

انہوں کہا کہ اگر اس جنگ کے دوران ہمارے گھر اور ديہات ويران ہوگئے ليکن حزب اللہ کے جوانوں کے پائے ثبات ميں ذرہ برابر لغزش نہيں آئي- واضح رہے کہ اسرائيل کو حزب اللہ کے خلاف سن دوہزار چھے کي تينتيس روزہ جنگ ميں ذلت آميز شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا- اس جنگ کے نتيجے ميں اسرائيل فوجب کے بہت اسے اعلي افسران کو اپنے عہدوں سے استفعے بھي دينا پڑے تھے