• صارفین کی تعداد :
  • 3327
  • 3/11/2009
  • تاريخ :

اندرا گاندھي ، ہندوستان کي خاتون سياست دان

برصغیر کی تقسیم کے بعد ہندوستان کی  سیاست پر کچھ نامور سیاسی شخصیات رونما ہوئیں جو آج بھی  اس علاقے کے لوگوں کے  ذہنوں میں موجود ہیں ۔ ان میں ایک جانا پہچانا نام اندرا گاندھی کا ہے  جو  ہندوستان کی ایک نامور خاتون سیاست دان بن کر ابھریں ۔  وہ سن 1917 ء میں پیدا ہوئیں  ۔  سیاسی خاندان سے ان کا تعلق تھا اور ان کے والد بھی ہندوؤں کے معروف لیڈر تھے ۔  ان کی وجہ شہرت ان کا سیاسی کیریئر ہی تھا۔

 

پنڈت جواہر لعل نہرو کی بیٹی الہ آباد میں پیدا ہوئیں۔ سوئزرلینڈ ، سمر ویل کالج آکسفورڈ اور بعد میں وشوا بھارتی شانتی نکتین میں تعلیم حاصل کی۔ گیارہ برس کی عمر میں سیاست میں حصہ لینا شروع کیا۔

انگلستان میں قیام کے دوران میں اور بعد از اں ہندوستان واپس آ کر بھی طلبا کی تحریکوں میں سرگرم حصہ لیتی رہیں۔ تحریک آزادی میں حصہ لینے کی پاداش میں تیرہ ماہ کے لیے جیل بھیج دی گئیں۔ 1942 میں ایک پارسی نوجوان فیروز گاندھی سے شادی کی۔ اسی زمانے میں ہندوستان چھوڑ دو کی تحریک چلی۔ جس میں حصہ لینے پر وہ اوران کا خاوند قید ہوگئے۔

 

1947 میں آل انڈیا کانگرس ورکنگ کمیٹی کی ممبر منتخب ہوئیں۔  بعد میں کانگرس کے شعبہ خواتین کی صدر، مرکزی انتخابی کمیٹی اور مرکز پارلیمانی بورڈ کی ممبر بنیں۔ فروری 1959 میں انڈین نشنل کانگرس کی صدر چنی گئیں۔ 66۔1964 میں وزیر اطلاعات و نشریات ہوئیں۔ 1966 میں لال بہادر شاستری کے انتقال کے بعد وزیراعظم منتخب ہوئیں۔ 1967 کے انتخابات میں کانگرس کی فتح کے بعد وزیراعظم بنیں۔ 

1971 کے انتخابات کے بعد تیسری مرتبہ وزیراعظم چنی گئیں۔ مارچ 1977 کے پارلیمانی انتخابات میں ان کی پارٹی کانگرس آئی نے جنتا پارٹی سے شکست کھائی۔ وہ خود بھی جنتا امیدوار راج نارائن سے ہار گئیں۔ 1978 میں مہاراشٹر کے ایک حلقے کے ضمنی انتخاب میں لوک سبھا کی رکن چن لی گئیں۔ لیکن دسمبر 1978 میں لوک سبھا نے، دوران حکومت اختیارات کے ناجائز استعمال کے جرم میں ان کی رکنیت منسوخ کر دی گئی۔ اورقید کی سزا دی۔

تقریبا ایک ہفتے بعد رہا کر دی گئیں۔ جنوری 1980 میں لوک سبھا کے عبوری انتخابات میں کانگرس آئی کی جیت ہوئی اور اندراگاندھی نے مرکز میں وزارت بنائی۔ سکھوں کے خلاف انھوں نے فوجی آپریشن کا آغاز کیا۔ اور گولڈن ٹمپل پر فوجی حملے کے بعد سکھوں میں ان کی ساکھ کو بہت نقصان پہنچا۔

1984 میں دو سکھ محافظوں نے گولی مار ان کو قتل کردیا۔ ان کے بیٹے راجیو گاندھی بعد میں ہندوستان کے وزیراعظم رہے۔ جبکہ ان کی بہو سونیا گاندھی ان دنوں انڈین نیشنل کانگرس کی صدر ہیں ۔

 

  • اندرا گاندھي
    اندرا گاندھي
  • اندرا گاندھي
    اندرا گاندھي
  • اندرا گاندھي
    اندرا گاندھي
  • اندرا گاندھي
    اندرا گاندھي
  • اندرا گاندھي
    اندرا گاندھي
  • اندرا گاندھي
    اندرا گاندھي
  • اندرا گاندھي
    اندرا گاندھي
  • اندرا گاندھي
    اندرا گاندھي
  • اندرا گاندھي
    اندرا گاندھي
  • اندرا گاندھي
    اندرا گاندھي
  • اندرا گاندھي
    اندرا گاندھي
  • اندرا گاندھي
    اندرا گاندھي
جیو اردو ڈاٹ کام