• صارفین کی تعداد :
  • 5136
  • 1/20/2008
  • تاريخ :

پیغمبر (ص) کی کریمانہ رفتار

یا رسول الله

 

رسول اكرم (ص) ملت اسلاميہ كے رہبر اور خدا كا پيغام پہنچانے پر مامور تھے اس لئے آپ (ص) كو مختلف طبقات كے افراداور اقوام سے ملنا پڑتا تھا ان كو توحيد كى طرف مائل كرنے كا سب سے بڑا سبب ان كے ساتھ آپ (ص) كا نيك سلوک تھا_

 

لوگوں كے ساتھ معاشرت اور ملنے جلنے كى كيفيت كے بارے ميں آپ (ص) سے بہت سى حديثيں وارد ہوئي ہيں ليكن سب سے زيادہ جو چيز آپ (ص) كى معنوى عظمت كى طرف انسان كى راہنمائي كرتى ہے وہ لوگوں كے ساتھ ملنے جلنے ميں نيك اخلاق اور آپ(ص) كى پاكيزہ سيرت ہے _

 

وہ سيرت جس كا سرچشمہ وحى اور رحمت الہى ہے جو كہ حقيقت تلاش كرنے والے افراد كى روح كى گہرائيوں ميں اتر جاتى ہے وہ سيرت جو ""اخلاق كے مسلم اخلاقى اصولوں"" (1) كے ايك سلسلہ سے ابھرتى ہے جو آپ (ص) كى روح ميں راسخ تھى اور آپ (ص) كى ساري زندگى ميں منظر عام پر آتى رہي_

 

 ""لكم فى رسول اللہ اسوۃ حسنۃ(1)  تمھارے لئے پيغمبر خدا(ص) كے اندر اسوہ حسنہ موجود ہے" آنحضور (ص) كے كريمانہ اخلاق ہمارے لئے بہترین نمونہ عمل ہیں_

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

1)سيرت نبوي، استاد مطہرى 34 ، 22_