• صارفین کی تعداد :
  • 5541
  • 3/4/2014
  • تاريخ :

عالمة غير معلمة حضرت زينب (س)

زینب کبری(س) نے یتیموں کی رکھوالی اور حفاظت

قال علي ابن الحسين عليہما السلام:

”‌ انت بحمد اللہ عالمة غير معلمة فہمة غير مفہمة“[1]

امام زين العابدين عليہ السلام فرماتے هيں کہ بحمد اللہ ميري پھوپھي (زينب سلام عليہا) عالمہ غيرمعلمہ هيں اور ايسي دانہ کہ آپ کو کسي نے پڑھايا نهيں هے.

زينب سلام عليہا کي حشمت و عظمت کے لئے يهي کافي تھا کہ انھيں خالق حکيم نے علم لدني ودانش وہبي سے سرفراز فرمايا تھا اور عزيزان گرامي آج کي مجلس کا عنوان هے ”‌زينب کربلا سے شام تک “ زينب ايک فرد نهيں بلکہ اپنے مقدس وجود ميں ايک عظيم کائنات سميٹے هوئے هيں ايک ايسي عظيم کائنات جس ميں عقل و شعور کي شمعيں اپني مقدس کرنوں سے کاشانہ انسانيت کے دروبام کو روشن کئے هوئے هيں اور جس کے مينار عظمت پر کردار سازي کا پر چم لہراتا هوا نظر آتا هے زينب کے مقدس وجود ميں دنيائے بشريت کي تمام عظمتيں اور پاکيز ہ رفعتيں سمٹ کر اپنے آثار نماياں کرتي هوئي نظر آتي هيں زينب کا دوسري عام خواتينوں پر قياس کرنا يقينا ناانصافي هے کيونکہ امتياز وانفردي حيثيت اور تشخص هي کے سائے ميں ان کي قدآور شخصيت کے بنيادي خدو خال نماياں هو سکتے هيں اور يہ کہنا قطعاً مبالغہ نهيں کہ زينب ايک هوتے هوئے بھي کئي ايک تھيں زينب نے کربلا کي سرزمين پر کسب کمال ميں وہ مقام حاصل کيا جس کي سرحديں دائرہ امکان ميں آنے والے ہر کمال سے آگے نکل گئيں اور زينب کي شخصيت تاريخ بشريت کي کردار ساز ہستيوں ميں ايک عظيم و منفرد مثال بن گئي ہم فضيلتوں کمالات اور امتيازي خصوصيات کي دنيا پر نظر ڈالتے هيں تو زينب کي نظير ہميں کهيں نظر نهيں آتي اور اس کي وجہ يهي هے کہ زينب جيسا کہ ميں نے بيان کيا هے کہ اپنے وجود ميں ايک عظيم کائنات سميٹے هوئے جس کي مثال عام خواتين ميں نهيں مل سکتي هے اور يہ بات يہ ايک مسلم حقيقت بن چکي هے کہ انساني صفات کو جس زاويے پر پرکھا جائے زينب کا نام اپني امتيازي خصوصيت کے ساتھ سامنے آتا هے جس ميں وجود انساني کے ممکنہ پہلوۆں کي خوبصورت تصوير اپني معنوي قدروں کے ساتھ نماياںدکھا ئي ديتي هے-صلوات ( جاري ہے )

 


متعلقہ تحریریں: