• صارفین کی تعداد :
  • 8758
  • 2/5/2014
  • تاريخ :

ايران کا اسلامي انقلاب اميد کي کرن

ایران کا اسلامی انقلاب امید کی کرن

اگردنيا ميں موجودہ حالات کا بغور مطالعہ کيا جائے تو لامحالہ انسان اس نتيجہ پر پہنچے گا کہ پوري دنيا ايک ہي سمت و سو حرکت کر رہي ہے- چاہے وہ مغرب سے اٹھنے والي آوازيں ہوں يا مشرق سے بلند ہونے والي صدائيں ،سب کا ايک ہي مقصد ہے اور وہ يہ کہ انسان ، انسان کے بنائے ہوئے قوانين کے ماتحت زندگي نہيں گزار سکتا ، انسان کو انساني زندگي بسر کرنے کے ليے مافوق بشر طاقت کے بنائے ہوئے قانون کي ضرورت ہے -

1979 عيسوي کو  ايراني قوم کے اندر يہ شعور بيدار ہوا تو انہوں نے رہبر کبير حضرت امام خميني رحمة اللہ عليہ کي انوکھي رہبريت ميں اپنے شعور کو پايہ تکميل تک پہنچايا اور اسلامي انقلاب قائم کرکے ايک نيا طرز زندگي اور جينے کا ڈھنگ دنيا والوں کو سکھايا، اسلام کو حيات مجدد عطا کي اور عالم اسلام کے ليے الہي حکومت کا ايک انمول اور بے نظيرعملي نمونہ پيش کيا-

انقلاب اسلامي ايران اسلامي سوچ اور تفکر کي اٹھان کا نقطہ آغاز تصور کيا جاتا ہے- ايک ايسے وقت جب بيسويں صدي عيسوي ميں سلطنت عثمانيہ کي کمزوري اور سقوط کے بعد اسلام دن بدن کمزور ہوتا جا رہا تھا، اس صدي کے آخري حصے ميں ايران ميں اسلامي انقلاب کي کاميابي نے اسلام کے احياء کے ايک نئے دور کي بنياد رکھ دي- ايران کے اسلامي انقلاب نے اپنے اندر پوشيدہ اعتقادي بنيادوں کے بل بوتے پر ايک طرف موجودہ صورتحال کے خلاف شديد قسم کا ردعمل ظاہر کيا اور دنيا کے نظام ميں اسلام کي موجودہ منزلت اور حيثيت کي نسبت اپني عدم رضايت کا اظہار کيا اور دوسري طرف حقائق کو آشکار کرنے والے اعتقادات کو پيش کر کے ديگر اسلامي تحريکوں کي جانب سے اسلام کے مطلوبہ اہداف کے حصول کيلئے اپنائي گئي اسٹريٹجي پر نارضايتي کا اعلان کيا- اس طرح سے انقلاب اسلامي ايران نے جدت پسندي پر مبني مفروضات کي بنياد پر تاريخ سازي کو چيلنج کيا اور جدوجہد کو مزيد بڑھانے اور روش تبديل کرنے پر زور ديا لہذا موجودہ صورتحال سے نجات اور مطلوبہ صورتحال کے حصول کيلئے ايک انتہائي مناسب متبادل کے طور پر سامنے آيا- ايران ميں جنم لينے والي اسلامي تحريک کي روش پوشيدہ صلاحيتوں کو بيدار کرنے اور اسلامي اقوام کے اندر ذخيرہ شدہ تفکرات و نظريات کو منظم کر کے بھرپور مديريت اور پوري طاقت کے ساتھ آگے بڑھنے اور حتي دوسري اسلامي تحريکوں سے بھي زيادہ تيزي سے عمل کرنے پر مشتمل تھي- لہذا ايران کي اسلامي تحريک دوسري مسلم اقوام کے درميان موجود نظرياتي تحريکوں کيلئے ايک رول ماڈل کي شکل اختيار کر گئي اور ان کي جانب سے اپنے اہداف اور اسٹريٹجي ميں بنيادي تبديلياں عمل ميں لانے کا باعث بن گئي-  (جاري ہے )


متعلقہ تحریریں:

اسلامي انقلاب نے جذبہ ايماني پيدا کيا

اسلامي انقلاب نے فلسطين کي مدد کي