• صارفین کی تعداد :
  • 2695
  • 1/12/2014
  • تاريخ :

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ سيزدھم )

شہادت امام رضا علیہ السلام کے بارے میں مختلف آراء ( حصّہ سیزدھم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء (حصّہ اوّل)

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ دوّم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ سوّم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ چہارم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ پنجم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ ششم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ ہفتم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ ہشتم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ نہم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ دہم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ يازدھم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ دوازدھم )

اہل سنت کے علماء ميں سے ايک کثير تعداد نے امام عليہ السلام کي طبعي موت کو مسترد کرديا ہے يا پھر ان کے ہاں اس حقيقت کو ترجيح دي گئي ہے کہ آپ (ع) کو شہيد کيا گيا ہے-

ذيل کے افراد ان ہي مۆرخين اور مۆلفين ميں سے ہيں:

ـ ابن حجر مکي ـ صواعق المحرقہ  ـ صفحہ 122 / ابن صباغ مالكى فصول المہمة صفحہ 250-

ـ مسعودى ـ اثبات الوصية ـ صفحہ 208/ التنبيہ و الاشراف صفحہ 203/ مروج الذہب / 3 / صفحہ 417-

ـ  لقشندى ـ مآثرالانافة فى معالم الخلافة / 1 / صفحہ 211-

ـ  قندوزى حنفى ـ ينابيع المودة، صفحہ 263 و 385-

ـ  جرجى زيدان ـ تاريخ تمدن اسلامى / 2 / بخش 4 / صفحہ 440، و کتاب امين و مأمون آخري صفحہ-

ـ  ابوبكر خوارزمى نے اپنے رسالے ميں اور احمد شلبى نے تاريخ اسلامى اور تمدن اسلامى / 3 / صفحہ 107- ميں يہ نکتہ بيان کيا ہے-

ـ  ابوالفرج اصفہانى ـ مقاتل الطالبيين – ابو زكريا موصلى ـ تاريخ موصل 171 / 352 - ابن طباطبا ـ الآداب السلطانية صفحہ 218 – شبلنجى ـ نور الابصار صفحہ 176 و 177 مطبوعہ 1948-

ـ  سمعانى ـ الانساب جلد 6  صفحہ 139-

ـ سنن ابن ماجہ بحوالہ تہذيب التہذيب الكمال فى اسماء الرجال صفحہ 278 - عارف تامرـ الامامة في الاسلام صفحہ 125-

ـ ڈاکٹر كامل مصطفى شيبى ـ الصلة بين التصوف و التشيع ـ صفحہ 226-

مأمون کے زمانے ميں امام رضا (ع) کے قتل کي خبر پھيل گئي تھي:

جب ہم تاريخي کتب کي طرف رجوع کرتے ہيں ديکھتے ہيں کہ امام رضا عليہ السلام کي شہادت مأمون کے ہاتھوں زہر خوراني کے نتيجے ميں واقع ہوئي اور يہ خبر مأمون کے دور ميں ہي پھيل کر معروف ہوگئي اور خاص و عام اس سے مطلع تھے- مأمون کو بھي يہ خبر پہنچ چکي تھي چنانچہ وہ خود بھي گاہے بگاہے شکوہ کيا کرتا تھا کہ "لوگ امام عليہ السلام کو زہرخوراني کا الزام اس پر کيوں عائد کرتے ہيں!"-

روايت ميں مذکور ہے کہ جب امام عليہ السلام شہيد ہوئے تو لوگ اجتماع کرکے بآواز بلند بيان کررہے تھے کہ امام کواس شخص (مأمون) نے دہشت گردي کا نشانہ بنايا ہے؛ اس سلسلے ميں لوگوں کا احتجاج اس قدربڑھ گيا کہ مأمون نے مجبور ہوکر آپ (ع) کے عم بزرگوار محمد بن جعفر کو عوام کے پاس بھجوايا اور ان کو عوام سے يہ کہنے پر مجبور کيا کہ "امام (ع) بلۆوں سے اجتناب کي خاطر آج گھر سے باہر نہيں نکليں گے"-(13) ( جاري ہے )


متعلقہ تحریریں:

امام رضا (ع) کي شخصيت معنوي

امام رضا (عليہ السلام) کي زيارت کي فضيلت