• صارفین کی تعداد :
  • 3949
  • 1/11/2014
  • تاريخ :

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ دوازدھم )

شہادت امام رضا علیہ السلام کے بارے میں مختلف آراء ( حصّہ دوازدھم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء (حصّہ اوّل)

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ دوّم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ سوّم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ چہارم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ پنجم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ ششم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ ہفتم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ ہشتم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ نہم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ دہم )

شہادت امام رضا عليہ السلام کے بارے ميں مختلف آراء ( حصّہ يازدھم )

 

احمد امين نے لکھا ہے کہ امام (ع) کي مسموميت اہل تشيع کا افسانہ ہے! تو اس کا جواب يہ ہے کہ اہل تشيع سے پہلے سني مۆرخين نے ہي لکھا ہے کہ مأمون اس جرم کا مرتکب ہوا تھا اور شيعہ بھي اس جرم کي داستان سنيوں کي کتابوں ميں پڑھا کرتے تھے- ليکن اگر پھر بھي مأمون کو خيرسگالي کي نسبت دينا ہے اور اس کو اس گناہ سے بري الذمہ قرار دينے پر بضد رہنا ہے تو وہ آکر ہمارے اس سوال کا جواب دے کہ: "مأمون نے امام عليہ السلام کے وصال کے بعد وليعہدي کا منصب آپ (ع) کے فرزند "محمد تقي الجواد عليہ السلام" کوکيوں نہيں سونپا؟ جبکہ امام جواد عليہ السلام مأمون کے داماد بھي تھے اور مأمون کو آپ (ع) کے فضل و علم و کمالات کا اعتراف بھي تھا!

امام جواد عليہ السلام نے ظاہري طور پر بچپنے کي عمر ميں ہي يحيي بن اکثم کے ساتھ مناظرہ کرکے ان کي تحسين جيت لي تھي- يہ مناظرہ بہت مشہور و معروف ہے-(12)

* ايک نظر جو درست بھي ہے يہ ہے کہ امام عليہ السلام کو مسموم کيا گيا اور اس ميں کوئي شک نہيں ہے- اور ابن جوزي نے بھي اس حقيقت کي طرف اشارہ کيا ہے-

ہمارے نزديک يہ رائے بالکل درست ہے البتہ شيخ اربلي نے کشف الغُمّہ ميں اس رائے سے اختلاف کيا ہے ليکن شيخ مفيد نے لکھا ہے کہ امام (ع) کو مسموم کيا گيا تھا- گو کہ شيخ مفيد نے لکھا ہے کہ: مأمون اور امام رضا عليہ السلام نے ساتھ مل کر انگور تناول کيا جس کے بعد امام عليہ السلام بيمار پڑگئے اور مأمون نے تمارض کرکے اپنے آپ کو بيمار ظاہر کيا!!-

بہر حال تمام شيعہ علماء اور مۆرخين کا اتفاق ہے کہ امام عليہ السلام کو مأمون نے زہرخوراني کے ذريعے شہيد کرديا اور يہ بہت اہم دليل ہے کيونکہ شيعہ علماء زيادہ بہتر انداز ميں ائمہ عليہم السلام کي احوال نويسي ميں غور کرتے تھے اور وہ اس حوالے سے کوئي بھي خفيہ زاويہ چھوڑنے کے لئے تيار نہيں ہوتے تھے- ( جاري ہے )


متعلقہ تحریریں:

امام رضا (عليہ السلام) کي زيارت کي فضيلت

امام رضا (ع) کي شخصيت معنوي