• صارفین کی تعداد :
  • 3134
  • 12/23/2013
  • تاريخ :

اھل بيت (ع) ہمارے چراغ

اھل بیت (ع) ہمارے چراغ

ذکر علي (ع) (حصہ اول)

حضرت علي عليہ السلام  کا ذکر (حصہ دوم)

حضرت  کي ولادت کا جشن (حصہ سوم)

مولا علي عليہ السلام کي عظمت (حصہ چہارم)

مولا علي  عليہ السلام کي شان ميں (حصہ پنجم)

حضرت علي عليہ السلام نے اسلام کي خدمت کي (حصہ ششم)

مولا علي عليہ السلام کي بےمثال شخصيّت (حصہ ہفتم)

 

تاريخ اسلام ميں جتنے مشاہير ہيں سب ہمارے سروں کے کے تاج ہيں صحابہ کرام ہماري آنکھوں کا نور اور دلوں کا سرور ہيں ، مگر ان ميں سے کون ہے جس کي دوسري يا تيسري نسل کے فرد کا نام بھي ہم جانتے ہوں مگر خانوادہ نبي و علي (ع) کو ديکھو کہ کس طرح صديوں سے اب تک چراغ سے چراغ جلتا چلا آ رہا ہے امام حسن (ع) و امام حسين (ع) سے امام جعفر صادق (ع) تک اور امام جعفر صادق سے ہوتے ہوئے امام موسيٰ کاظم (ع) اور امام رضا (ع) تک اور امام رضا (ع) سے لے کر امام مہدي آخر الزمان (ع) تک کتنے چاند ستارہ ہيں جو آسمان اہل بيت پر جگمگ جگمگ کر رہے ہيں-

شگفتہ گلشن زہرا کا ہر گل تر ہے

کسي ميں رنگ علي (ع) ہے کسي ميں بوئے رسول

اور آج اس کي ولادت کا جشن ہے جس کے بارے ميں ميرے مرحوم دوست حضرت جوش  مليح آبادي نے کہا اور کيا خوب کہا جب جناب علي مرتضيٰ (ع) کي ولادت ہوئي تو کيا منظر تھا ميں جناب جوش کي نظم کے چند بند پيش کرتا ہوں:

گل ہو گيا زمين پہ اوہام کا چراغ

تشکيک سے يقين کو حاصل ہوا فراغ

چھوما نسيم عقل سے نوع بشر کا باغ

اترا دماغ دل ميں تو دل بن گيا دماغ

اوج خرد پہ صبح کي سرخي عياں ہوئي

يہ آئے تو حريم نظر ميں اذاں ہوئي

سلمائے روز گار کو زريں قباملي

انسانيت کو دولت صد ارتقاء ملي

ہنستي ہوئي قدر کے گلے سے قضا ملي

آغوش ميں رسول کو اپني دعا ملي

جيسے ہي نصف نور ملا نصف نور سے

اپنے کو کردگار نے ديکھا غرور سے

منبر پہ آفتاب تکلم عياں ہوا

موج مئے غدير لئے خم عياں ہوا

دريائے مرحمت ميں تلاطم عياں ہوا

انصاف کے لبوں پہ تبسم عياں ہوا

ڈالي نگاہ فخر سے دنيا نے دين پر

قرآن آسمان سے اترا زمين پر

( رسالہ الغدير ص/19 سے 23)

 

 

علامہ کوثر نيازي  کي تقرير سے اقتباس

بشکريہ مھدي مشن ڈاٹ کام


متعلقہ تحریریں:

حضرت  کي ولادت کا جشن

غدير خم کے واقعہ  ميں شرطيہ کلمات