• صارفین کی تعداد :
  • 621
  • 8/4/2013
  • تاريخ :

رہبر انقلاب اسلامي کي جانب سے عہدۂ صدارت کي توثيق

رہبر انقلاب اسلامی کی جانب سے عہدۂ صدارت کی توثیق

رہبر انقلاب اسلامي حضرت آيت اللہ العظمي سيد علي خامنہ اي کي جانب سے عہدۂ صدارت کي توثيق کۓ جانےکے بعد حجۃ الاسلام و المسلمين ڈاکٹر حسن روحاني باضابطہ طور پر ايران کے صدر بن گۓ ہيں-

کل ہفتے کے دن رہبر انقلاب اسلامي نے ڈاکٹر حسن روحاني کے عہدۂ صدارت کي توثيق فرمائي تھي- جس کے بعد وہ باضابطہ طور پر ايران کے صدر بن گۓ -

حضرت آيت اللہ العظمي خامنہ اي نے کل منتخب صدر ڈاکٹرحسن روحاني کے عھدہ صدارت کي توثيق کي تقريب سے خطاب ميں فرمايا کہ ملت ايران نے اسلامي انقلاب کي کاميابي سے قبل عوامي حکومت کا تجربہ نہيں کيا تھا-

آپ نے فرمايا کہ ديني محوريت اور اسلامي جمہوريہ ايران ميں عوام تمام مسائل ميں کليدي کردار کے حامل ہيں- رہبرانقلاب اسلامي نے ملت ايران کے خلاف دشمنوں کي پابنديوں کے بارے ميں فرمايا کہ پابنديوں کے دوران ملت ايران اور حکام نے گرانقدر تجربے حاصل کئے ہيں-

رہبرانقلاب اسلامي نے پابندياں ايسا سبق ہيں جو ہميں يہ سکھاتي ہيں کہ ملک کي ترقي کے لئے ملک کي داخلي توانائيوں پر بھروسہ کرنا چاہيے-

آپ نے فرمايا کہ مغربي ممالک ايران کي علمي اور سائنسي پيشرفت کو روکنے ميں ناکام رہے ہيں- رہبرانقلاب اسلامي نے عالمي يوم قدس کےموقع پر عوام کي بھرپور شرکت کي طرف اشارہ کرتے ہوئے فرمايا کہ ايراني عوام نے يوم جمعہ استقامت کو اھل عالم کو اپني استقامت سے آگاہ کرديا اور صيہوني حکومت کے بارے ميں اپنا موقف بھي ظاہر کرديا -

قابل ذکر ہے کہ رہبرانقلاب اسلامي حضرت آيت اللہ العظمي خامنہ اي کے حضور منتخب صدر ڈاکٹر حسن روحاني کے عھدہ صدارت کي توثيق کي تقريب ميں صدر جناب احمدي نژاد، منتخب صدر ڈاکٹر حسن روحاني، اسپيکر ڈاکٹر لاريجاني، عدليہ کے سربراہ صادق آملي لاريجاني، تشخيص مصلحت نظام کونسل کے سربراہ آيت اللہ ہاشمي رفسنجاني اور ملک کے اعلي سول اور فوجي عھديدار شريک تھے -

رہبرانقلاب اسلامي کے دفتر کے سربراہ نے حکم توثيق پڑھ کرسنايا جس کے بعد ڈاکٹر حسن روحاني نے کل سے باضابطہ طور پر اسلامي جمہوريہ ايران کے گيارھويں صدر کا عہدہ سنبھال ليا-

 

 

متعلقہ تحریریں:

مسائل کا حل باہمي مشاورت سے، حسن روحاني

مصر کے حالات انتہائي دردناک، رہبر انقلاب اسلامي