• صارفین کی تعداد :
  • 8584
  • 4/13/2013
  • تاريخ :

اسلامي انقلاب ايران کے متعلق مغربي نظريہ دانوں کي   خوش فہمي

ایران

اسلامي انقلاب اور مغربي  تاثرات

انقلاب ايران سے اسلام کي سربلندي

خدا کي حاکميت کي طرف رحجان

ايران کے اسلامي انقلاب نے نيا ساختار متعارف کروايا

3-   ايران  کے اسلامي انقلاب سے پہلے   معاشرے ميں انقلاب کے متعلق نظريہ پيش کرنے والے افراد کا رحجان  بناوٹي  تھا يعني  ان کي کوشش ہوتي تھي کہ انتخابي طور پر انقلابات کي تحقيق سے انقلاب کي تھيوري تک رسائي حاصل کر ليں تاکہ دنيا ميں آنے والے ہر انقلاب کي تفسير بتانے کے ساتھ اس کي پيش بيني بھي کر سکيں -  محترمہ اسکاچپول ايسے ہي نظريہ دانوں ميں سے تھيں جو انقلاب کو   اتفاقي طور پر عملي اور ارادے کے بغير تصور کرتي تھي  اور يہ خيال کرتي تھيں کہ انقلاب  وجود ميں لاۓ نہيں جاتے بلکہ خود بخود آ جاتے ہيں -  اس نے اپني تھيوري کو کچھ ايسے تبديل کيا -

" انقلاب آ جاتے ہيں نہ کہ لاۓ جائيں الا ايران کے اسلامي انقلاب کے "

اس ليۓ اسلامي انقلاب نے يہ ثابت کر ديا کہ ايک عظيم معاشرتي پديدہ  کو وجود ميں لايا جا سکتا ہے اور  يہ جديد ارزش اور مفہوم ہے کہ جس کو اسلامي انقلاب نے دنيا ميں تھيوري بنانے  کے لحاظ سے پيش کيا ہے -  (29)

لوگوں پر توجہ : ايران کے اسلامي انقلاب کي ايک اور خاص بات اور قابل ارزش چيز ايران کے لوگ تھے  جنہوں نے بہت سي سياسي جماعتوں اور تحريکوں ميں فعال کردار ادا کيا - ان تحاريک اور جماعتوں کو يہ اچھي طرح معلوم ہے کہ اسلام ميں وہ طاقت ہے جو لوگوں کي بڑي تعداد ميں  رضاکارانہ طور پر خدمات انجام دينے  کا جذبہ پيدا کرتي ہے - جبھہ اسلامي سوڈان کے رہنما ڈاکٹر حسن الترابي  اس بات کے معتقد ہيں کہ  انقلاب اسلامي ايران نے فہم و فراست والے لوگوں اور  دوسرے عام لوگوں کي بڑي تعداد کو اسلام کي دعوت کے ليۓ ايک قيمتي تحفہ کے طور پر پيش کيا ہے - فہم و فراست رکھنے والے لوگوں کي بدولت اسلامي تحريکوں ميں وحدت آئي ہے جس سے ان ميں تفرقہ بازي کا خاتمہ ہونے کے ساتھ مضبوط ، بہتر مواقع ، پائيدار اور وسيع پيمانے پر حمايت نصيب ہوئي  ہے -  (30)

شعبۂ تحرير و پيشکش تبيان