• صارفین کی تعداد :
  • 571
  • 2/15/2012
  • تاريخ :

ضرب المِثل اشعار (4)

کتاب

*اب تو گھبرا کے يہ کہتے ہيں کہ مرجائيں گے

’مر کے بھي چين نہ پايا تو کدھر جائيں گے‘

شاعر: محمد ابراہيم ذوق

 *اب عطر بھي مَلو تو تکلُّف کي بُو کہاں

’وہ دِن ہوا ہوئے کہ پسينہ گُلاب تھا‘

شاعر: لالہ مادھو رام جوہر فرخ آبادي

 *ابتدائے عشق ہے روتا ہے کيا

’آگے آگے ديکھئے ہوتا ہے کيا‘

شاعر: مير تقي مير

 *آپ ہي اپني اداؤ ں  پہ ذرا غور کريں

’ہم اگر عرض کريں گے تو شکايت ہوگي‘

شاعر: مير وزير علي صبا

* اپنا زمانہ آپ بناتے ہيں اہلِ دل

ہم وہ نہيں کہ جن کو زمانہ بنا گيا

شاعر: جگر مراد آبادي

بشکريہ : شاعري ڈاٹ کلان ٹيم  ڈاٹ کام

پيشکش : شعبۂ تحرير و پيشکش تبيان