• صارفین کی تعداد :
  • 1750
  • 11/10/2011
  • تاريخ :

اھل بيت عليھم السلام کے پيرو کار اور ان کے دشمن

اھل بيت عليھم السلام

ميں وہ صراط مستقيم هوں جس کي اتباع کا خدا نے حکم ديا ھے-  پھر ميرے بعد علي (ع)  ھيں اور ان کے بعد ميري اولاد جو ان کے صلب سے ھے يہ سب وہ امام ھيں جو حق کے ساتھ ھدايت کر تے ھيں اور حق کے ساتھ انصاف کر تے ھيں - 

اس کے بعد آنحضرت (ص)  نے اس طرح فرمايا :<بسم اللہ الرحمٰن الرحيم،  الحمد للہ رب العا لمين - - - > سوره الحمد کي تلاوت کے بعد آپ نے اس طرح فرمايا :

خدا کي قسم يہ سورہ ميرے اور ميري اولاد کے با رے ميں نا زل هوا ھے ،  اس ميں اولاد کےلئے عمو ميت بھي ھے اور اولاد کے ساتھ خصوصيت بھي ھے -  يھي خدا کے دوست ھيں جن کےلئے نہ کوئي خو ف ھے اور نہ کو ئي حزن ‍!  يہ حزب اللہ ھيں جو ھميشہ غالب رہنے والے ھيں - 

آگاہ هو جاو کہ دشمنان علي ھي اھل  تفرقہ ،  اھل تعدي اور برادران شيطان ھيں جو  اباطيل کو خواھشات نفساني کي وجہ سے ايک دوسرے تک پهونچا تے ھيں -

آگاہ هو جا و کہ ان کے دوست ھي مو منين بر حق ھيں جن کا ذکر پر ور دگار نے اپني کتاب ميں کيا ھے:

<لَاتَجدُ قَوْماًيُومنُوْنَ باللہ والْيَوْم الْآخريُوَادُّوْنَ مَنْ حَادَّاللہَ وَرَسُوْلَہ وَلَوْ کَانُوْااٰبَائَھُمْ اَوْاَبْنَائَھُمْ اَوْاخْوَانَھُمْ اَوْعَشيْرَتَھُمْ ، اُولٰئکَ کَتَبَ فيْ قُلُوْبھم الايْمَانَ - - - >

”‌آپ کبھي نہ ديکھيں گے کہ جو قوم اللہ اور آخرت پر ايمان رکھنے والي ھے وہ ان لوگوں سے دوستي کر رھي ھے جو اللہ اور رسول سے دشمني کر نے والے ھيں چاھے وہ ان کے باپ دادا يا اولاد يا برادران يا عشيرة اور قبيلہ والے ھي کيوں نہ هوں اللہ نے صاحبان ايمان کے دلوں ميں ايمان لکھ ديا ھے “

آگاہ هو جا و کہ ان (اھل بيت ) کے دوست ھي وہ افراد ھيں جن کي توصيف پر ور دگار نے اس انداز سے کي ھے :< الَّذيْنَ آمَنُوْاوَلَمْ يَلْبَسُوْاايْمَانَھُمْ بظُلْمٍ اُوْلٰئکَ لَھُمُ الْاَمْنُ وَھُمْ مُھْتَدُوْن>

”‌ جو لوگ ايمان لا ئے اور انھوں نے اپنے ايمان کو ظلم سے آلودہ نھيں کيا انھيں کےلئے امن ھے اور وھي ھدايت يا فتہ ھيں “

آگاہ هو جاؤ کہ ان کے دوست وھي ھيں جو ايمان لائے ھيں اور شک ميں نھيں پڑے ھيں - 

آگاہ هو جاو کہ ان کے دوست ھي وہ ھيں جو جنت ميں امن و سکون کے ساتھ داخل هو ں گے اور ملا ئکہ سلام کے ساتھ يہ کہہ کے ان کا استقبال کريں گے کہ تم طيب و طاھر هو ،  لہٰذا جنت ميں ھميشہ ھميشہ کےلئے داخل هو جا و “

آگاہ هو جاو کہ ان کے دوست ھي وہ ھيں جن کے لئے جنت ھے اور انھيں جنت ميں بغير حساب رزق دياجائيگا - 

آگاہ هو جاو کہ ان (اھل بيت )  کے دشمن ھي وہ ھيں جوآتش جہنم کے شعلوں ميںداخل هوں گے- 

آگاہ هو جاو کہ ان کے دشمن وہ ھيں جوجہنم کي آواز اُس عالم ميں سنيں گے کہ اس کے شعلے بھڑک  رھے هوں گے اور وہ ان کو ديکھيں گے - 

آگاہ هو جا و کہ ان کے دشمن وہ ھيں جن کے با رے ميں خدا وند عالم فر ماتا ھے:

<کُلَّمَا دَخَلَتْ اُمَّةٌ لَعَنَتْ اُخْتَھَا- - - >

”‌ (جہنم ميں)  داخل هو نے والاھر گروہ دوسرے گروہ پر لعنت کرے گا - - -  ‘ ‘

آگاہ هو جا و کہ ان کے دشمن ھي وہ ھيں جن کے با رے ميں پر ور دگار کا فرمان ھے:

< کُلَّمَا اُلْقيَ  فيْھَا فَوْجٌ سَاَلَھُمْ خَزْنَتُھَااَلَمْ يَاتکُمْ نَذيْرٌ. قَالُوْابَلَيٰ قَدْجَاءَ نَانَذيْرٌفَکَذَّبْنَاوَقُلْنَامَانَزَّلَ اللہُ منْ شَيْءٍ انْ اَنْتُمْ الَّافيْ ضَلَالٍ کَبيْرٍ.- - - اَلَا فَسُحْقاًلاَصْحَا ب السَّعيْر>

”‌ جب کوئي گروہ داخل جہنم هو گا تو جہنم کے خازن سوال کريں گے کيا تمھا رے پاس کو ئي ڈرانے والا نھيں آيا تھا ؟ تو وہ کھيں گے آيا تو تھا ليکن ھم نے اسے جھٹلا ديا اور يہ کہہ ديا کہ اللہ نے کچھ بھي نا زل نھيں کيا ھے تم لوگ خود بہت بڑي گمرا ھي ميں مبتلا هو - - - آگاہ هو جاؤ تو اب جہنم والوں کےلئے تو رحمت خدا سے دوري ھي دوري ھے“ 

آگاہ هو جا و کہ ان کے دوست ھي وہ ھيں جو اللہ سے از غيب ڈرتے ھيں اور انھيں کےلئے مغفرت اور اجر عظيم ھے - 

ايھا الناس!  ديکھو آگ کے شعلوں اوراجر عظيم کے ما بين کتنا فا صلہ ھے -  

ايھا الناس!  ھمارا دشمن وہ ھے جس کي اللہ نے مذمت کي اور اس پر لعنت کي ھے اور ھمارا دوست وہ ھے جس کي اللہ نے تعريف کي ھے اور اس کو دوست رکھتا ھے - 

ايھا الناس!  آگاہ هو جا و کہ ميں ڈرانے والا هوں اور علي (ع)  بشارت دينے والے ھيں -  

ايھا الناس!  ميں انذار کرنے والا اور علي (ع)  ھدايت کرنے والے ھيں- 

ايھا الناس!  ميں پيغمبر هوں اور علي (ع)  ميرے جانشين ھيں - 

ايھا الناس!  آگاہ هو جاو ميں پيغمبر هوں اور علي (ع)  ميرے بعد امام اور ميرے وصي ھيں اوران کے بعد کے امام ان کے فرزند ھيں آگاہ هو جاو کہ ميں ان کا باپ هوں اور وہ اس کے صلب سے پيدا هو نگے- 

پيشکش : شعبۂ تحرير و پيشکش تبيان


متعلقہ تحريريں:

بارہ اماموں کي امامت اور ولايت کا قانوني اعلان

ايک اھم مطلب کے لئے خداوند عالم کا فرمان

خطبہ غدير

اھل بيت (ع) کي  شان ميں کتب

 مسئلہ فلسطين اور عالمي يوم قدس