• صارفین کی تعداد :
  • 1731
  • 6/15/2011
  • تاريخ :

زيارتي شہر کاشان  ( حصّہ دوّم )

شہر کاشان

امامزاده شاهزاده عيسى و يحيى

اس امامزادے کي عمارت  مسجد ابيانھ کے نزديک واقع ہے اور  اس کے زيارت نامہ کے مطابق  يہاں پر دو امامزادے دفن ہيں ۔ ايک کا نام شہزادہ عيسي اور دوسرے کا نام شہزادہ يحيي  ہے ۔ محققين کا خيال ہے کہ  اس کي عمارت چھٹي صدي  ہجري قمري کي ہے  اور صفوي طور کے آخر ميں ايک   خيرہ خواہ خاتون کے ہاتھوں اس کي تعمير ہوئي  ۔

شہر کاشان

امامزاده شاهزاده هادى

شہزادہ ھادي حضرت امام زين العابدين  عليہ السلام کي اولاد ميں سے تھے ۔ ان کي آرامگاہ  آران اور بيدگل کے درميان واقع ہے ۔  اس کا گنبد بلند اور کاشي کاري ہونے کي وجہ سے بےحد خوبصورت نظر آتا ہے ۔  اس آرامگاہ کي پہلي عمارت کو صوفيھ کے دور حکومت ميں تعمير کيا گيا ۔  مختلف ادوار ميں ہونے والي  مرمت اور  جديد تعميرات کي  وجہ سے  قديم عمارت ميں کافي حد تک تبديلي  واقع ہوئي ہے ۔

شہر کاشان

امام زادہ شاہ عباس

يہ آرامگاہ مغرب ميں  ليشتر کے مقام پر واقع ہے ۔  اس کا گنبد بڑا ہے اور اس پر تزئين و آرائش کا بہت  عمدہ نمونہ پيش کيا گيا ہے ۔  اس امامزادے کے تعميراتي   ڈيزائن اور انداز سے اندازہ ہوتا ہے کہ  اس عمارت کي تعمير صفوي دور حکومت سے پہلے  ہوئي تھي ۔

شہر کاشان

اما‌زاده شاه‌يلان

يہ آرامگاہ  بازار زرگر کاشان کے نزديک واقع ہے جہاں پر سليمان بن موسي بن جعفر عليہ السلام  دفن ہيں ۔  اس عمارت کي تعمير سلجوقي طرز پر کي گئي ہے  جس کے وسط ميں امام زادہ کي قبر واقع ہے ۔ اس  آرامگاہ کي کاشي کاري کو  کاشان کے تاريخي آثار کے ميوزيم ميں منتقل کر ديا گيا ہے ۔

تحرير : سيد اسداللہ ارسلان


متعلقہ تحريريں:

ايران کے صوبہ گيلان کي گمشدہ جنت

خليج فارس کے سواحل ( حصّہ دوّم)

خليج فارس کے سواحل

کچي اينٹوں سے بنا ايران کا سب سے بڑا گنبد

مٹي سے بني ايران کي بلند ترين عمارت