• صارفین کی تعداد :
  • 1265
  • 5/14/2012
  • تاريخ :

افغانستان کي امن کميٹي کے رکن مولوي ارسلا رحماني کے قتل کي ذمہ داري قبول

 مولوی ارسلان رحمانی

فدائيان محاذ نامي ايک گروہ نے افغانستان کي امن کميٹي کے رکن مولوي ارسلا رحماني کے قتل کي ذمہ داري قبول کي ہے-

ابنا: حمزہ نامي ايک شخص نے خود کو اس گروہ کا ترجمان بتاتےہوئے مولوي رحماني کے قتل کي ذمہ داري قبول کي ہے.

 مولوي ارسلان رحماني طالبان سے مذاکرات کرنے کے ذمہ دار تھے اور امن کميٹي کے فعال اراکين ميں شمار ہوتے تھے-

ادھر اطلاعات ہيں کہ طالبان کے وہ کمانڈر جو پاکستان سے ہٹ کر افغانستان کي حکومت کے قريب ہونےکي کوشش کرتے انہيں پراسرار طور پر قتل کرديا جاتا ہے- اس سے قبل طالبان نے افغانستان کي امن کميٹي کے چيرمين پروفيسر برہان الدين رباني کو قتل کيا تھا- برہان الدين رباني طالبان کے خود کش حملے ميں مارے گئے تھے-