• صارفین کی تعداد :
  • 2977
  • 3/3/2011
  • تاريخ :

تیز ترین کار کی تیاری شروع

تیز ترین کار

کاریگروں نے ایک ایسی کار کی تیاری کا باقاعدہ آغاز کر دیا ہے جس کے بارے میں کہا جا رہا ہے کہ وہ دنیا کی تیز ترین کار ہو گی۔

یہ کار جسے بلڈ ہاؤنڈ کا نام دیا گیا ہے، ایک ہزار میل یا سولہ سو کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار پر سفر کرے گی۔

یہ کار آئندہ برس جنوبی افریقہ کے ناردرن کیپ کی ایک خشک جھیل پر تیز ترین کار بننے کی کوشش کرے گی۔

بلڈہاؤنڈ کے ڈیزائن کی تیاری گزشتہ تین برس سے جاری تھی۔ اس کار میں یورو فائٹر جنگی جہاز میں استعمال ہونے والے ٹائیفون جیٹ انجن ایک ہائی برڈ راکٹ کے اوپر نصب ہوں گے۔

ان انجنز اور راکٹ سے دو سو کلو نیوٹن توانائی حاصل ہوگی۔

اس منصوبے کے چیف انجینیئر مارک چیپمین کا کہنا ہے کہ ’یہ شاندار احساس ہے کہ اب اس کی ڈرائنگز ان افراد کو دی جا رہی ہے جو اس کار کو تیار کریں گے‘۔

اس کار کا چیسز خلائی جہازوں سے متعلق سامان بنانے والے ادارہ ہیمپسن انڈسٹریز تیار کرے گا۔ انہیں اس کار کے چیسز کے ڈیزائن چند دن قبل ہی فراہم کیے گئے ہیں۔

اگر بلڈ ہاؤنڈ ایک ہزار میل فی گھنٹہ کی رفتار حاصل کرنے میں کامیاب رہی تو وہ سنہ انیس سو ستانوے میں تھرسٹ سپر سانک کار کی جانب سے قائم کردہ سات سو تریسٹھ میل فی گھنٹہ کی رفتار سے سفر کا ریکارڈ توڑ دے گی۔

بلڈ ہاؤنڈ منصوبے پر کام کرنے والے تین افراد ایسے بھی ہیں جو تھرسٹ کار کے منصوبے پر کام کر چکے ہیں۔ یہ افراد ڈرائیور ونگ کمانڈر اینڈی گرین، پراجیکٹ ڈائریکٹر رچرڈ نوبل اور چیف ایروڈائنیمسٹ ران آئرز ہیں۔

توقع کی جا رہی ہے کہ بلڈہاؤنڈ کار برطانیہ میں کم رفتار کے تجربات کے لیے آئندہ برس کے پہلے چھ ماہ تک تیار ہو جائے گی جس کے بعد اسے جنوبی افریقہ بھیجا جائے گا جہاں وہ سنہ 2012 کے اواخر یا 2013 کے آغاز میں تیز ترین رفتار کا ریکارڈ توڑنے کی کوشش کی جائے گی۔

بی بی سی اردو ڈاٹ کام


متعلقہ تحریریں:

کرہ ارض کا مرکز ( تیسرا حصّہ )

مریخ کے تودوں کی ہیئت ہر سال بدلتی ہے

کرہ ارض کا مرکز ( حصّہ دوّم )

کرہ ارض کا مرکز ’گرینچ‘ یا ’مکة المکرمہ ؟

فیس بک کی مقبولیت ہیکرز کے لیے فائدہ مند ہے