• صارفین کی تعداد :
  • 14911
  • 2/8/2010
  • تاريخ :

مکتوب نمبر 13

امیرالمؤمنین علیہ السلام

 فوج کے دو سرداروں کے نام:

 میں نے مالک ابن حارث اشتر کو تم پر اور تمہارے ماتحت لشکر پر امیر مقرر کیا ہے .لہٰذا ان کے فرمان کی پیرو ی کرو, اور انہیں اپنے لیے زرہ اور ڈھال سمجھو. کیونکہ وہ ان لوگوں میں سے ہیں جن سے کمزوری و لغزش کا اور جہاں جلدی کرنا تقاضائے ہوشمندی ہو وہاں سستی کا, اور جہاں ڈھیل کرنا مناسب ہو وہاں جلد بازی کا اندیشہ نہیں ہے.

 جب حضرت نے زیاد ابن نضر اور شریح ابن ہانی کے ماتحت بارہ ہر اول دستہ شام کی جانب روانہ کیا تو راستہ میں سو رالروم کے نزدیک ابو الاعور سلمیٰ سے مڈ بھیڑ ہوئی جو شامیوں کے دستہ کے ساتھ وہاں پڑاؤ ڈالے ہوئے تھا اور ان دونوں نے حارث ابن جمہان کے ہاتھ ایک خط بھیج کر حضرت کو اس کی اطلاع دی جس پر آپ نے ہراول دستے پر مالک ابن حارث اشتر کو سپہ سالار بنا کر روانہ کیا اور ان دونوں کو اطلاع دینے کے لیے یہ خط تحریر فرمایا. اس میں جن مختصر اور جامع الفاظ میں مالک اشتر کی توصیف فرمائی ہے. اس سے مالک اشتر کی عقل و فراست, ہمت و جرات اور فنون حرب میں تجربہ و مہارت اور ان کی شخصی عظمت و اہمیت کا اندازہ ہو سکتا ہے.

 


متعلقہ تحریریں:

مکتوب نمبر 9

مکتوب نمبر 8

مکتوب نمبر7 

مکتوب نمبر6  

مکتوب نمبر 5