• صارفین کی تعداد :
  • 11590
  • 2/2/2010
  • تاريخ :

مکتوب نمبر 11

امیرالمؤمنین علیہ السلام

 دشمن کی طرف بھیجے ہوئے ایک لشکر کو یہ ہدایتیں فرمائیں .

 جب تم دشمن کی طرف بڑھو یا دشمن تمہاری طرف بڑھے تو تمہارا ٹیلوں کے آگے یا پہاڑ کے دامن میں یا نہروں کے موڑ میں ہونا چاہیے تاکہ یہ چیز تمہارے لیے پشت پناہی اور روک کا کام دے, اور جنگ بس ایک طرف یا (زائد سے زائد دو طرف سے ہو) اور پہا ڑوں کی چوٹیوں اور ٹیلوں کی بلند سطحوں پر دید بانوں کو بٹھا دو تاکہ دشمن کسی کھٹکے کی جگہ سے یا اطمینان والی جگہ سے (اچانک) نہ آپڑے اور اس بات کو جانے رہو کہ فوج کا ہر اوّل دستہ فوج کا خبر رساں ہوتا ہے. اور ہر اوّل دستے کو اطلاعات ان مخبروں سے حاصل ہوتی ہیں (جو آگے بڑھ کر سراغ لگاتے ہیں) دیکھو تتر بتر ہونے سے بچے رہو, اترو تو ایک ساتھ اترو, اور کوچ کرو تو ایک ساتھ کرو, اور جب رات تم پر چھا جائے تو نیزوں کو (اپنے گرد ) گاڑ کر ایک دائرہ سا بنا لو, صرف اونگھ لینے اور ایک آدھ جھپکی لے لینے کے سوا نیند کا مز ہ نہ چکھو .


متعلقہ تحریریں:

مکتوب نمبر1

مکتوب نمبر2

مکتوب نمبر3

مکتوب نمبر4

مکتوب نمبر5

مکتوب نمبر6

مکتوب نمبر7